شجا ع خانزادہ قتل کیس میں ملزم قاسم کا اہم انکشاف

خود کش بمبار کو موٹر سائیکل پر ڈیرے پر پہنچایا گیا، قاسم معاویہ

خود کش بمبار کو موٹر سائیکل پر ڈیرے پر پہنچایا گیا، قاسم معاویہ

لاہور: شجاع خانزادہ پرخودکش حملے کے ملزم قاسم معاویہ نے تفتیش کےدوران انکشاف کیا ہے کہ وزیر داخلہ پنجاب کو 6 اگست کو بھی ان کے ڈیرے پر ہی نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی۔

ذرائع کے مطابق وزیرداخلہ پنجاب کرنل ریٹائرڈ شہید شجاع خانزادہ کے ڈیرے پرحملے میں ملوث قاسم معاویہ نے دوران تفتیش مزید انکشاف کئے ہیں، اس نے بتایا ہے کہ خودکش حملے کے لئے زیادہ مدد دہشت گردوں کے مقامی ساتھیوں نے کی تھی، خود کش بمبار کو موٹر سائیکل پر ڈیرے پر پہنچایا گیا اور دہشت گرد نے اپنی موٹر سائیکل ڈیرے پر ہی چھوڑدی تھی۔

قاسم معاویہ کا کہنا تھا کہ انہوں نے شجاع خانزادہ کو 6 اگست کو بھی ان کے ڈیرے پر ہی نشانہ بنانے کی کوشش کی گئی تھی ، اس سلسلے میں خودکش حملہ آور کو بھی ان کے ڈیرے پر پہنچادیا گیا تھا لیکن شجاع خانزادہ اس سے پہلے ہی ڈیرے سے جاچکے تھے۔

واضح رہے کہ 17 اگست کو اٹک میں شجاع خانزادہ کے ڈیرے پر خود کش حملہ کیا گیا تھا جس کے نتیجے میں ان سمیت 18 افراد جاں بحق ہوگئے تھے۔

لاہور میں سنگدل باپ نے روٹی گول نہ بنانے پر بیٹی کو قتل کردیا

ملزم نے انیقہ کی لاش کو میو اسپتال کے مردہ خانے کے باہر لاوارث حالت میں چھوڑدیا تھ

ملزم نے انیقہ کی لاش کو میو اسپتال کے مردہ خانے کے باہر لاوارث حالت میں چھوڑدیا تھ

لاہور: سنگدل باپ نے روٹی گول نہ بنانے پر  12 سالہ بیٹی کو تشدد کا نشانہ بنا کر جان سے ہی مار ڈالا۔

یہ افسوس ناک واقعہ 13 ستمبر کو لاہور کے علاقے نیوانارکلی میں پیش آیا جہاں 12 سالہ معصوم انیقہ کو اس کے باپ اور بھائی نے روٹی ٹھیک طرح سے نہ پکانے پر اسے ڈنڈے اور قینچی سے وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا جس کہ وجہ سے وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئی۔جنونی باپ نے جرم چھپانے کے لئے بیٹے کے ساتھ مل کر انیقہ کی لاش کو میو اسپتال کے مردہ خانے کے باہر لاوارث حالت میں چھوڑدیا  اور بعد ميں خود مدعی بن كر شادباغ تھانہ ميں اغواءاور قتل كا مقدمہ بھی درج كرواديا۔..پولیس نے سی سی ٹی فوٹیج اور اہل محلہ کے بیانات کی روشنی میں تحقیقات کے بعد ملزم اور اس کے بیٹے کو گرفتار کرلیا جہاں دونوں سنگدل باپ پیٹے نے قتل کا اعتراف بھی کرلیا۔رپورٹ کے مطابق ملزم جنونی قسم کا انسان ہے اور اکثر اپنی بیوی اور بچوں کو مارتا رہتا ہے،تشدد کے باعث اس کی بیوی چار ماہ قبل گھر چھوڑ کر جاچکی ہے۔

کراچی: سماء ٹی وی کی گاڑی پر فائرنگ

attackonsama

سماء ٹی وی کے مطابق ان کی ڈیجیٹل سیٹلائیٹ نیوز گیدرنگ (ڈی ایس این جی) وین پر لیاقت آباد 10 نمبر میں پل کے نیچے فائرنگ کی گئی۔   ڈی ایس این جی کے ڈرائیور نے بتایا کہ گاڑی پر 5 سے 6 فائر کئے گئے۔ سماء ٹی وی نے رپورٹ کیا کہ جس وقت گاڑی پر حملہ کیا گیا اس وقت گاڑی میں عملہ موجود نہیں تھا۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ گاڑی کے ساتھ کیمرہ کامران الدین اور ڈرائیور سلیم تعینات تھے۔

فائرنگ سے جانی نقصان نہیں ہوا البتہ گاڑی کو نقصان پہنچا۔ سماء ٹی وی کے مطابق موٹر سائیکل پر سوار 2 ملزمان نے فائرنگ کی، فائرنگ کے بعد ملزمان با آسانی فرار ہوگئےفائرنگ سے ڈی ایس این جی وین کے پیچے کا شیشہ ٹوٹ گیا جبکہ ٹائر گولی لگنے سے پنکچر ہوا۔

سماء کے کیمرہ مین کامران الدین نے بتایا کہ حملہ آوروں کی فائرنگ کے بعد انہوں نے ڈرائیور کو گاڑی تیز چلا کر محفوظ مقام پر لے جانے کا کہا، حملہ آروں نے ڈی ایس این جی پر پیچھے سے فائرنگ کی۔ کامران الدین نے بتایا کہ ایک شخص وہاں سے عید کے حوالے سے قربانی کا بکرا لے کر جا رہا تھا اس بکرے کو گولی لگی، جس سے بکرا مر گیا۔ حملہ ہونے کے فوری بعد لیاقت آباد 10 نمبر پر پولیس اور رینجرز کے اہلکاروں کی بڑی تعداد پہنچی۔

کراچی۔ سرچ آپریشن کے دوران خود کش دھماکہ

blastinkarachi

ملیر کے علاقے رفاہ عام سوسائٹی میں حساس ادارے اور پولیس نے دہشت گردوں کی موجودگی کی اطلاع پر سرچ آپریشن کیا۔ شہر کے خارجی اور داخلی راستے بند کر کے گھروں کی تلاشی لی جارہی تھی۔ سرچ آپریشن کے دوران خودکش بمبار نے گھیرے میں آنے پر خود کو دھماکے سے اڑا لیا۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ایس ایس پی راو انوار نے بتایا کہ ہلاک ہونے والے خودکش بمبار کا نام فرحان عرف پہلوان تھا۔ یہ دہشت گرد ایک سال سے اس مکان میں رہائش پذیر تھا۔ راو انور کا یہ بھی کہنا تھا کہ فرحان بہت بڑا دہشت گرد تھا۔ یہ دہشت گردی کی بہت سی وارداتوں میں ملوث تھا۔ پولیس افسر نے بتایا کہ خودکش بمبار نے پولیس اور حساس ادارے پر فائرنگ کی اور دستی بم کا استعمال بھی کیا۔ جس سے سابق ایس ایچ او سچل شعیب اور کانسٹیبل اشرف شدید زخمی ہوئے۔

بزدلانہ حملوں سے قوم کے مورال کو نیچا نہیں کیا جاسکتا

khursheed shah

ملتان آغازِ سفر ۔ اپوزیشن لیڈر خورشید شاہ نے نشتر ہسپتال ملتان کا دورہ کیا اور ملتان بم دھماکے میں زخمی ہونے والے افراد کی عیادت کی۔ سابق وزیر اعظم جناب یوسف رضا گیلانی بھی ان کے ہمراہ تھے۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے خورشید شاہ کا کہنا تھا کہ اس طرح کے بزدلانہ حملوں سے قوم کے مورال کو نیچا نہیں کیا جاسکتا ۔ 13ستمبر کی رات ہونے والے بم حملے میں 11افراد زندگی کی بازی ہار گئے تھے اور 50افراد زخمی ہو گئے تھے